28

ضلع منڈی بہاﺅالدین میں روڈ ٹریفک حادثات کے متاثرین کا عالمی دن منایا گیا۔


​ منڈی بہاو الدین ( ​ مجزین حسین بلال )ضلع منڈی بہاﺅالدین میں روڈ ٹریفک حادثات کے متاثرین کا عالمی دن منایا گیا۔ یہ دن منانے کا مقصد ان تمام لوگوں کو خراج تحسین پیش کرنا ہے جوحادثات میں بروقت مدد فراہم کرتے ہیں جن میں خاص طور پر ریسکیورز ، پولیس اور میڈیکل سے وابستہ لوگ شامل ہیں۔اس سلسلے میں روڈز کو سفر کے لیے محفو ظ بنانے کے حوالے سے عوام میں آگاہی پیدا کرنے کے لیے واک اور ورکشاپ کا اہتمام بھی کیا گیا۔ ڈی ایس پی ٹریفک پولیس پرویز اقبال گوندل ،ریسکیوسیفٹی انسٹرکٹرزشوکت علی،ریسکیوانسٹرکٹرزعصمت جاوید، افضال احمد،ٹریفک پولیس اہلکاران سمیت طلباءکی کثیرتعداد بھی موجود تھی۔اس موقع پر ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر منڈی بہاﺅالدین انجینئر عمران خان نے ریسکیوجوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب ایمرجنسی سروس تمام اضلاع میں اب تک روڑ ٹریفک حادثات میں33لاکھ سے زائد لوگوں کو بروقت مدد مہیا کر چکی ہے جبکہ پنجاب میں اوسطً900حادثات میں روزانہ کی بنیاد پر ریسکیو سروس فراہم کرتی ہے جن میں اکثر گھر کے واحد کفیل نوجوان افرادہوتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ 40فیصد حادثات کی وجہ اوورسپیڈنگ،33 فیصد غیر محتاط ڈرائیونگ،8فیصد غلط مڑنے کے سبب جبکہ 12فیصد دیگر وجوہات کی بنا پر ہوئے۔عمران خان نے کہا کہ اگر آنے والے وقتوں میں روڑ ٹریفک حادثات کی روک تھام کے لیے مربوط اور ترجیحی بنیادوں پر کام نہ کیا گیا تو آنے والے چند سالوں میں ہر گھر روڑٹریفک ایکسیڈنٹ سے متاثر ہو سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب یہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ذمہ داری ہے کہ وہ قانون کی پاسداری کو یقینی بنائیں ، ڈرائیونگ لائسنسنگ سسٹم کو مزید بہتر کیا جائے، ٹریفک انجینئرنگ ،گاڑیوںکی رجسٹریشن اور فٹنس ، افراد معاشرہ کا ذمہ درانہ رویے کے ساتھ ساتھ زیبرہ کراسنگ اورسٹر ک پر آنے والے تمام لوگ ایک دوسرے کے حقوق کا ذمہ داری سے احترام کرتے ہوئے “محفوظ روڈ” بنانے میں اپنا کردار ادا کریں۔انہوں نے ریسکیو جوانوں کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے اپنے علاقہ جات میں ریسرچ کرتے ہوئے حادثات کی وجوہات معلوم کریں اور ضلعی حکومت اور کمیونٹی کے باہمی تعاون سے حادثات کی روک تھام کے لیے ضروری اقدامات کرتے ہوئے حادثات میں کمی لانے کی کوشش کریں۔اس موقع پر ڈی ایس پی ٹریفک پرویز اقبال گوندل نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ میڈیا کے ذریعے آگاہی اور تربیت سے لوگوں کے رویے میں تبدیلی لانے کی ضرورت ہے کیونکہ کسی بھی حادثے کی وجہ ڈرائیور ،گاڑی،سٹرک، اورسٹرک کے استعمال کرنے والوں کی وجہ سے ہوتے ہیںجبکہ زیادہ تر حادثات ڈرائیور کی لا پرواہی کی وجہ سے ہوتے ہیں ۔ انہوں نے الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا سے بھی اپیل کی کہ وہ حادثات کی شرح میں کمی لانے کے لیے ترجیحی بنیادوں پراس فلاحی کام کے لیے عوامی آگاہی پیدا کریں۔ سیمینار کے اختتام پر ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر عمران خان اور ڈی ایس پی ٹریفک پرویز اقبال گوندل کی قیادت میں آگاہی ریلی بھی نکالی گئی۔ ریلی کے شرکاءنے سڑک پر حادثات سے بچاﺅ کی اٰحتیاطی تدابیر کے حوالے سے بینرز بھی اٹھا رکھے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں