42

پاکستان تحریک انصاف ویسٹرن ریجن سعودیہ عرب کے سابقہ ایم سیز اور سابقہ باڈیز نے حالیہ پارٹی نامزدگیوں اور موجودہ انتخابی نظام کو مسترد کردیا۔ سیف اللہ نیازی سمیت اعلیٰ قیادت سے نظر ثانی کی اپیل۔ قرارداد منظور


جھنگ(حامد ناصر قادری سے)
مورخہ 2 نومبر شام جدہ کے ایک مقامی ہوٹل میں پاکستان تحریک انصاف ویسٹرن ریجن کے سابقہ باڈیز اور ایم سیز کا ایک اجلاس منعقد ہوا جسمیں کثیر تعداد میں جدہ اور مکہ مکرمہ کے پارٹی کے سینئیر کارکنان سمیت سابقہ عہدیداروں نے شرکت کی۔ اجلاس میں خلیجی ممالک میں پارٹی کے حالیہ انتخابات کے نام پر نامزدگیوں پر سیر حاصل گفتگو ہوئی اور ایک متفقہ قرارداد بھی منظور ہوئی جسمیں پارٹی کے اعلیٰ قیادت خصوصی طور پر سیف اللہ نیازی سے حالیہ فیصلوں پر نظر ثانی کی اپیل کی گئی ۔ اس ضمن میں ایک کمیٹی تشکیل دی گئ جو پوری سعودی عرب کی سینیئر اور پھر پاکستان میں قیادت سے رابطے کرے گی اور اگر کارکنان کے تحفظات کو دور نہیں کیا گیا تو کارکنان مسقبل کے لئے لائحہ عمل خود طے کریں گے۔ اجلاس میں باقاعدہ طور پر موجودہ انتخابی نظام کو مسترد کردیا گیا، جسمیں سابقہ انتخابی نظام کے مقابلے میں پارٹی کی ممبرشپ میں 96 فیصد کمی ہوئی ۔ میرٹ کی دھجیاں اڑائی گئیں ، صرف من پسند افراد کو آگے لانے کے لئے بائی لاز بنائے گئے۔
اجلاس میں پارٹی قیادت سے خلیجی ممالک کے لیئے بنائے گئے بائی لاز کو سعودی عرب کی سینیئر قیادت کی مشاورت کے ساتھ بنا کر نئے پارٹی الیکشن کروانے کا مطالبہ کیا گیا۔
اس اجلاس میں قرارداد کو پی ٹی آئی سعودی عرب کے سابقہ ریجنل باڈی کے ممبران صدر سلطان عبد الباسط، جنرل سیکرٹری انجم اقبال وڑائچ، انفارمیشن سیکرٹری زاہد محمود اعوان، جدہ سٹی سے جنرل سیکرٹری عجب خان، نائب صدر شہباز اختر بھٹی، مکہ سٹی کے صدر ڈاکٹر خالد خان خٹک، جنرل سیکرٹری سید خاقان، انفارمیشن سیکرٹری مفتی عزیر بھٹہ، مدینہ منورہ کے سابقہ عہدیداران صدر افضل عباس، انفارمیشن سیکرٹری الامین، اور جدہ، مکہ مکرمہ اور ینبع کے سینئر رہنما، ممبران اور سابقہ ونگز کے عہدیداران عدنان فاروقی، محمد زبیر، تنویر صدیق خان، مظہر خان، سرفراز احمد، عمران خان، چوہدری فیاض احد، ارسلان شاہد، اشفاق واحد، چوہدری ناصر حسن، انصر اقبال مغل، ممتاز سالارزئی، اصغر شنواری، بیرسٹر افتخار چیمہ، اکبر حسین، رانا علی اختر، محمد وسیم،ملک امجد اقبال، انجینئر روف گوندل، ملک سجاد جوئیہ اور دیگر نے یہ متفقہ قرارداد منظور کی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں