133

ہنگامی بنیادوں پر سندھ حومت سے احتجاج

ہنگامی بنیادوں پر سندھ حومت سے احتجاج
اندرون سندھ کے علاقے تھرپارکر سمیت میرپورخاص ڈویژن میں بڑھتے کرونا وائرس کے حملے ہونے پر بھی حکومت سندھ وزیراعلی اور وزیر صحت کی بے حسی، لاپرواہی اور نا اہلی کے سبب نئے اسپتال اور میڈیکل کالج کے افتتاح کو بلاوجہ تعطل دینا قابل جرم ہے، حالیہ دور میں میرپورخاص شہر میں نئے تعمیر شدہ اسپتال کو آپریشنل کیا جائے ادویات سمیت اسٹاف کی تعیناتی کو ہنگامی بنیادوں پر احکامات جاری کیۓ جائیں یاد رہے میرپورخاص جنگشن سے جڑے کئی شہر آباد ہیں، کئی سو دیہات منسلک ہیں جن کے مریض میرپورخاص سول اسپتال لائے جاتے ہیں، عمائدین شہر کے معزز شخصیات کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت کو تعمیر شدہ نئے اسپتال کو ہنگامی بنیادوں پر آپریشنل کردینا چاہئے تاکہ موجودہ دور میں اٹھنے والے مرض کرونا وائرس کے مریضوں کو طبی امداد فراہم کی جاسکے، عمائدین شہر کا یہ بھی کہنا ہےکہ نئے اسپتال میں وینٹیلرز کی تعداد کم از کم سو رکھی جائے اگر حکومت سندھ نے اس حالات میں بھی اقدامات نہ اٹھائے تو ثابت ہوجائیگا کہ پی پی پی حکومت صرف لوٹ گھسوٹ کرپشن اور بدعنوانی پر ہی تکیہ رکھتی ہے اور اس میں کوئی اہلیت نہیں کہ ریاست کے امور کس طرح چلائے جاتے ہیں اب دیکھنا ہے کہ سندھ حکومت صوبے پر توجہ دیتی ہے یا روز کی طرح چینلز پر وفاق پر سوائے تنقید کے کچھ نہیں کرتی ۔۔
جاویدصدیقی:
جرنلسٹ، کالم کار، محقق، تجزیہ نگار کراچی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں